نماز جنازه

ایک بار نبی رحمت حضرت محمد صلی الله علیه وآله وسلم ایک غلام کی نماز جنازه سے فارغ هو کر گھر تشریف لائے حضرت عائشہ رضی الله عنھا نے آپ صلی الله علیه وآله وسلم کا استقبال کیا اور پھر بہت حیرت سے آپ صلی الله علیه وآله وسلم کے لباس مبارک کو هاتھ سے چھو کر دیکھا اس پر نبی کریم صلی الله علیه وآله وسلم نے پوچھا ۔

عائشہ ! خیریت تو هے ؟ انھوں نے عرض کیا ، یا رسول الله صلی الله علیه وآله وسلم ! میں حیران هوں که آج اس قدر بارش هوئی لیکن آپ صلی الله علیه وآله وسلم کے لباس مبارک پر نمی کے آثار تک نظر نہیں آ رهے ایسا کیوں هے ؟ آپ صلی الله علیه وآله وسلم نے پوچھا ، اے عائشہ ! تم نے سر پر کیا اوڑھ رکھا هے ؟ انھوں نے عرض کیا که میں نے آپ صلی الله علیه وآله وسلم کی چادر مبارک اوڑھی هوئی هے اس پر آپ صلی الله علیه وآله وسلم نے فرمایا ، اے پاک دامن ! آج بارش نہیں هوئی جو چادر تم نے اوڑھ رکھی هے اس چادر کی وجه سے تمھاری آنکھوں سے حجابات اٹھ گئے اور تم نے جو بارش دیکھی وه ظاہری آسمان کی بارش نه تھی بلکہ رحمت الهی کی بارش تھی . ( مثنوی مولانا روم ) سُبْحَانَ اللّهِ وَ بِحَمْدِهِ سُبْحَانَ اللّهِ الْعَظِيم

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: