تین تحفے

” حضرت جبریل علیہ السّلام حضرت آدم علیہ السّلام کے پاس تین تحفے لائے ” جب اللّٰه تعالٰی نے حضرت آدم علیہ السّلام کو پیدا فرمایا تو حضرت جبریل علیہ السّلام ان کے پاس تین تحفے لائے: ” عِلم،حیا،عقل اور فرمایا! اے آدم ( علیہ السّلام )! ان تینوں میں جسے دِل چاہے قبول کرو۔ ” حضرت آدم علیہ السّلام نے عقل کو اِختیار فرما لیا۔

حضرت جبریل علیہ السّلام نے عِلم و حیا کو اِشارہ کِیا کہ تم اپنے اپنے مقامات پر واپس چلے جاؤ۔اُنہوں نے کہا: ” عالمِ ارواح میں ہم یکجا تھے اب عالمِ اِشباح ( یعنی عالمِ اِجسام ) میں ایک دوسرے سے جُدائی گوارا نہیں۔فلہذا اب ہم عقل کے پیچھے ہوتے ہیں۔ ” حضرت جبریل علیہ السّلام نے فرمایا: ” اچھا! چلو جاؤ۔ ” حضرت آدم علیہ السّلام کے دماغ میں عقل ٹھہر گئی اور دِل میں عِلم اور آنکھ میں حیا۔ نام کتاب = تفسِیر رُوح البیان ( جِلد اوّل ) صفحہ = ۱۳۷ مُصَنّف = علامہ اِسمٰعیل حقی رحمتہ اللّٰه علیہ مترجم = شیخ القُرآن والتفسِیر والحدیث حضرت علامہ مُفتی محمد فیض احمد اویسی رحمتہ اللّٰه علیہ

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: