ایک عورت

ایک عورت تھی جس پر ایک شخص اپنا دل ہار بیٹھا کسی کام کی غرض سے وہ عورت خیمے سے باہر نکلی تو یہ آدمی بھی اس کے ساتھ ساتھ چل دیا حتی کہ جنگل میں وہ اکیلے رہ گئے اور جب تمام لوگ سو گئے تو

اس آدمی نے عورت پر اپنی بات ظاہر کردی عورت نے دریافت کیا کہ کیا قافلہ کے تمام لوگ سو گئے ہیں۔ آدمی کو خوشی ہوئی کہ شاید عورت میرا مطالبہ تسلیم کر چکی ہے وہ اٹھ کر قافلے کے گرد گھوما اور دیکھا کہ تمام لوگ سو گئے ہیں وہ واپس آیا اور عورت کو بتایا کہ قافلے کے تمام لوگ سوئے ہوئے ہیں ۔ تو عورت نے کہا اللہ تعالی کے متعلق تم کیا کہتے ہو۔ کیا اللہ تعالی بھی سو گیا ہے؟ اس شخص نے جواب دیا کہ اللہ تعالی سویا نہیں کرتا نہ ہی اس کے لیے نیند ہے اور نہ اس کے لیے اونگھ ہے۔ عورت کہنے لگی جو نہ سویا ہے اور نہ ہی سوئے گا وہ اللہ ہم کو دیکھ رہا ہے خواہم اس کو دیکھیں یا نہ دیکھیں ۔ پھر تو ہمیں چاہیے کہ لوگوں سے زیادہ ہم اللہ سے خوف کریں۔ پس اس شخص نے اللہ تعالی کے خوف سے اس عورت کو چھوڑ دیا اور توبہ کرکے ہمیشہ کے لئے گناہ سے باز رہا

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: