چند سوالات

شاہ روم ہرقل نے حضرت معاویہ بن ابوسفیان رضی اللہ عنہ کو چند سوالات لکھ بھیجے کہ ان کا جواب دو: 1۔ وہ کون سی شے ہے جس سے ہر شے ہے ،اور وہ کون سی شے ہے جو لاش( کچھ نہیں) ہے؟ 2۔ چار چیزیں ہیں جن میں روح تو ہے لیکن ان چاروں کا وجود ماں کے رحم اور باپ کے پیٹھ میں نہیں تھا؟ 3۔ وہ کون تھا جن کی پیدائش بغیر باپ کے ہوئی؟ 4۔ اس آدمی کا کیا نام ہے جس کی پیدائش بغیر ماں کے ہوئی؟ 5۔ قوس قزح کیا چیز ہے؟ 6۔ وہ کون سا درخت ہے جو بغیر پانی کے اگتا ہے؟ 7۔ وہ کونسی چیز ہے جو سانس تو لیتی ہے لیکن اس کے اندر روح نہیں ہوتی؟ 8۔ آج، گزشتہ کل، آئندہ کل اور آئندہ کے بعد۔۔۔۔؟

حضرت معاویہ رضی اللہ عنہ نے ان سوالات پر عبداللہ بن عباس رضی اللہ عنہ کا جواب پا کر ہرقل کو لکھا: 1۔ وہ شے جس سے ہر شے ہے، پانی ہے اللہ تعالی کا ارشاد ہے: ” اور ہم نے پانی سے ہر زندہ چیز پیدا کی۔” اور وہ شے جو لاشے ( کچھ بھی نہیں) ہے، وہ دنیا ہے جو ختم ہونے والی اور زوال پذیر ہے۔ 2۔ وہ چار چیزیں جن میں روح تو ہے لیکن ان کا وجود ماں کے رحم اور باپ کی پیٹھ میں نہیں تھا، یہ ہیں: 1۔ آدم علیہ السلام،2۔ حوا علیہ السلام، 3۔ صالح علیہ السلام کی اونٹنی، 4۔ اسماعیل علیہ السلام کا مینڈھا 3۔ حضرت مسیح علیہ السلام کی پیدائش بغیر باپ کے ہوئی۔ 4۔ حضرت آدم علیہ السلام کی پیدائش بغیر ماں کے ہوئی۔ 5۔ قوس قزح اللہ تعالی کی طرف سے بندوں کو غرقاب ہونے سے “ایمان” ہے۔ 6۔ بغیر پانی کے اگنے والا درخت “یقطین” ہے جسے اللہ تعالی نے یونس علیہ السلام کے اوپر اگایا تھا۔ 7۔ وہ چیز جو سانس تو لیتی ہے مگر اس کے اندرروح نہیں ہے وہ صبح ہے۔ اللہ تعالی فرماتا ہے: ” اور قسم ہے صبح کی جب کہ اس نے سانس لیا”۔ القرآن۔ 8۔ جہاں تک آٹھویں سوال کا تعلق ہے تو آج عمل ہے، گزشتہ کل مثال ہے، آئندہ موت ہے، اور آئندہ کل کے بعد مشکل الحصول آرزو اور امید ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: