جس نے اپنے رب کی محبت کو پالیا تھا

ایک شخص تھا جس نے اپنے رب کی محبت کو پالیا تھا اسے اللہ کی معارفت حاصل ہوگئی تھی اور اس نے اللہ کے احکامات پر عمل کرنا شروع کردیا تھا. لیکن وہ کیا دیکھتا ہے کہ اس کے آس پاس کے لوگ اللہ کی یاد سے منہ موڑے ہوئے ہیں وہ اللہ کے احکامات پر عمل نا کرنے کی وجہ سے مرجھا رہے ہیں ان کے دل اللہ سے دوری کی وجہ سے مردہ ہوتے جا رہے ہیں اب وہ شخص جسے اللہ کی معارفت حاصل ہوچکی تھی لوگوں کو اللہ کے احکامات سے آگاہ کرنے کے لیے خوب محنت کرتا ہےاور امید کا دامن کبھی نہیں چھوڑتا یہاں تک کہ وہ اللہ ہی کی راہ میں شہید ہوجاتا ہے.

لیکن وہ کوشش اور محنت جو اس نے اللہ کا پیغام لوگوں تک پہنچانے کے لیے کی تھی وہ رائیگا نہیں گئی اور آنے والی نسل نے اللہ کے احکامات پر عمل کرنا شروع کردیا اور صرف یہی نہیں اللہ نے اس شخص کا جس نے اللہ کے احکامات کو لوگوں تک پہنچانے کے لیے کوششیں کی تھی اس کا ذکر خیر لوگوں میں باقی رکھا الحمدللہ

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: