اطاعت اور محبت

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا ہے: میں اس کی بات مانتا ہوں جو میری اطاعت کرے اور اس سے محبت کرتا ہوں جو مجھ سے محبت کرتا ہے میں اسے دینے والا ہوں جو مجھ سے طلب کرے اور میں معاف کرنے والا ہوں اس کو جو مجھ سے معافی مانگے۔ بس انسان کو اللہ تعالی کی اطاعت کرنی چاہیے عبادت کے دوران خلوص اور خوف رکھنا چاہیے اس کی طرف سے امتحان میں صابر رہے اس کی دی ہوئی نعمتوں پر شکر گزار رہے اور اسی پر قناعت پزیر ہو کر رہو جو وہ عطا کرتا ہے ۔

اور اللہ تعالی نے فرمایا ہے کہ میری قضا پر جو شخص راضی نہ ہو میری طرف سے آزمائش پر صبر نہ کرے میری نعمتوں پر شکر گزار نہ ہو اور میری عطاپر قناعت نہ کرے وہ میرے سوا دیگر کوئی رب تلاش کر لے۔ جناب حسن بصری رحمتہ اللہ علیہ کی خدمت میں ایک شخص عرض گزار ہوا کہ مجھے عبادت میں لطف نہیں آتا ہے تو آپ نے فرمایا کہ شاید تو نے اس کے چہرے پر نظر ڈالی ہے جسے اللہ تعالی سے ڈر نہیں ہے عبادت تو یہ ہے کہ اللہ تعالی کی خاطر تو ہر چیز کو ترک کردے یہاں مراد ہے کہ لطف کو بھی چھوڑ دے خضرت بایزید رحمۃاللہ علیہ کی خدمت میں کسی نے عرض کیا کہ مجھے عبادت میں لطف نہیں آتا تو آپ نے فرمایا کہ اسکی وجہ تیری اطاعت کی عبادت کرنا ہے تو اللہ تعالی کی عبادت نہیں کرتا تو اللہ تعالی کی عبادت کرے گا تو پھر تجھے اس میں لذت بھی ملے گی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: