بیت المقدس کی عورت

بیت المقدس میں ایک عورت تھی وہ روزانہ رجب کے مہینے میں قل ھواللہ احد بارہ ہزار مرتبہ پڑھا کرتی تھی اور ماہ رجب میں اون کے کپڑے بنے ہوئے پہنتی تھی وہ بیمار پڑ گئی اپنے بیٹے کو اس نے کہا میرا اونی لباس میرے ساتھ دفن کر دینا وہ فوت ہو گئی تو اس کو عمدہ کپڑے میں دفن کردیا بیٹے نے اس کو دوران خواب دیکھا تو اس نے بیٹے سے کہا میں تجھ سے خوش نہیں ہوں کیوں کہ تو میری وصیت پر عمل پیرا نہ ہوا بس وہ گھبرایا ہوا بیدارہوا تو اس نے وہ اونی باس لیا کہ قبر کے اندر اس کو دفن کرے قبر کو اس نے کھولا تو دیکھا کہ اس کی ماں قبر میں کیا ہے اسے حیرت ہوئی اسی اثنا میں اس کو ایک آواز سنائی دی کیا تو نے یہ بات نہیں سنی کہ جس نے ماہ رجب میں ہماری عبادت کی ہم نے اس کو اکیلا نہیں چھوڑا۔ ر

وایت ہے کہ ماہ رجب کے اول جمعے سے جس وقت رات کا تیسرا حصہ باقی رہ جاتا ہے تو رجب کے جو شخص روزے رکھتا ہوں اس کے حق میں ہر ایک فرشتہ بخشش کی دعا کرتا ہے۔ حضرت انس سے مروی ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کا ارشاد ہے جو ماہ رجب میں تین روزے رکھے اس کے لیے نو صد سال کی عبادت کا ثواب درج کر دیا جاتا ہے۔ حضرت انس فرماتے ہیں کہ اگر رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے میں نے یہ سماعت نہ کیا ہو تو میرے کان بہرے ہو جائیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: