رمضان المبارک 21 یومِ شہادت سیدنا حضرت علی المرتضیٰ رضی اللہ عنہ

وہ “علی” جسکا نام سنتے ہی خیبر کے درو دیوار آج بھی کانپ جاتے ہیں۔ وہ “علی” جسکے بارے میں حضور ﷺ نے فرمایا
“منافق آدمی علی سے پیار نہیں کرے گا آور مومن اس سے بغض نہیں رکھے گا”
(ترمذی شریف: 3717)
صحابہ کرام فرماتے ہیں کہ ہم نے اگر کوئی منافق دیکھنا ہوتا تو “سیدنا علی المرتضیٰ رضی اللہ عنہ” سے بغض رکھنے والے کو دیکھ لیتے تھے۔

حضور ﷺ فرماتے ہیں

“علی تم میرے لئے ایسے ہو جیسے “موسیٰ”کے لئے “ہارون”

“علی” جنت میں تیرا گھر میرے گھر کے بالکل سامنے ہوگا”

غزوہ احد میں حضرت علیؓ کی تلوار ٹوٹ گئی تو نبی کریم ﷺ نے ذوالفقار حضرت علیؓ کو *ذولفقار” عطا فرمائی جو بعد میں ان کے پاس رہی. اس تلوار کے متعلق بہت سے روایات مشہور ہیں. کچھ لوگوں کا یہ بھی ماننا ہے کہ یہ تلوار حضرت جبرائیلؑ لے کر آئے۔
آج کل ذوالفقار کہاں ہے؟
رسول کریم ﷺ نے مجموعی طور پر 9 تلواریں استعمال کیں جن میں البطر، الحتف، عذب وغیرہ شامل ہیں. جن میں سے 8 توپ کاپی میوزیم ترکی میں رکھی ہوئی ہیں اور شاید ایک تلوار قاہرہ مصر میں ہے لیکن ذوالفقار کہیں نہیں ملی. کچھ لوگوں کا ماننا ہے کہ یہ حضرت امام حسینؓ کو منتقل ہوئی اور اسکے بعد ان کی اولاد کے پاس گئی. اور اب قیامت سے پہلے حضرت امام مہدی کے پاس ہو گی. کچھ کے مطابق یہ واپس اللہ کے پاس چلی گئی. (واللہ اعلم)

وقت کے ساتھ ساتھ ذوالفقار تلوار کی ایک قسم کا نام بن گیا جس کے آگے دو دھاریں ہوں.ذوالفقار کے متعلق بہت سی ضرب الامثال اور اشعار مشہور ہیں. عرب کا مشہور محاورہ ہے؛
“لا فتی الا علی ولا سیف الا ذوالفقار”
(علیؓ جیسا کوئی مرد نہیں اور ذالفقار جیسی کوئی تلوار نہیں۔
برسے نہ اس ترنگ سے بادل اساڑھ کے

قربان ذوالفقار تری گھاٹ باڑھ کے

مداح ہوں جو حیدر و صفدر کا اے سحر

ہے خامۂ دوسر میں اثر ذوالفقار کا

سلطنتِ عثمانیہ کی افواج میں ذوالفقار کے حوالے سے بہت عقیدت موجود تھی. ان کے پرچموں میں اکثر ذوالفقار کا نقش دیکھنے کو ملتا ہے. ذوالفقار ایک عقیدت اور طاقت کا نشان بن گئی.

دنیا کی بہترین تلوار. ذوالفقار..

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: