”اللہ تعالیٰ کس انسان سے محبت کرتا ہے؟“

اللہ مجھ سے محبت کرتا ہے؟ یہ سوال اکثر میرے ذہن میں گردش کرتا ہے۔ پھر ایک دن مجھے خیال آیا کہ میرا رب جن بندوں کو زیادہ چاہتا ہے۔ ان کے بارے میں تو اس نے آیتیں اتاریں ہیں۔ سو میں قرآن مجید کھول کر بیٹھ گیا۔ میں نے ڈ ھونڈا تو پہلی آیت ملی “وہ متقین سے محبت کرتا ہے” مجھے ملال ہوا مجھ میں تو نام کا بھی تقوی نہیں ۔ پھر میں نے آگے پڑھا کہ وہ “صابرین” کو محبوب رکھتا ہے۔ مجھے اپنے بے صبرا ہونے پر شدید افسو س ہوا۔

مزید آگے بڑھا توجانا”اللہ مجاہدین” (کوشش کرنے والے سے محبت کرتا ہے۔ میں نے جانا کہ میں کم ہمت و حوسلہ والا ہوں۔ پھر پڑھا کہ وہ احسان یعنی نیک اعمال کرنے والوں کو پسند کرتا ہے۔ مگر میں اس سے بھی بہت دور رہا ہوں۔ پھر میں نے اپنی تلا ش ترک کرنے کا فیصلہ کیا اس ڈر سے کہ اب شاید میرے پاس ایسا کچھ بھی نہیں جس کے باعث اللہ مجھ سے محبت کرے۔ میں نے اپنے اعمال کھنگالے تو وہ سب فتور اور گن ا ہوں سے آلودہ تھے۔ پھر میں مصحف بند کرنے لگا۔ پھر اچانک میری نظر اللہ کے اس قول پر پڑی۔ ” بے شک اللہ توبہ کرنے والوں سے محبت رکھتا ہے”۔ سو میں نے اپنا مقام پالیا۔ ایک بہت ہی پیار ی حدیث شریف ہے۔ آپ ﷺ نے ارشاد فرمایا: کہ جس نے کسی کو تکلیف دی اسے اللہ تکلیف دے گا۔ جس نے کسی کو مشقت دی اللہ اسے مشقت دے گا۔ دیکھیں یا درکھیں! کہ جب بھی کوئی انسان آپ کو تکلیف دے مشقت میں ڈالے۔ تو آپ اپنے سار ے فیصلے اللہ پرچھوڑ دیں۔ بدلہ کبھی مت لیں۔ کیونکہ بدلہ وہ لوگ لیتے ہیں۔ جو اللہ سے نہیں ڈرتے۔ اللہ تعالیٰ سے دعا کہ ہم سب کو اپنے حفظ اومان میں رکھے۔ اللہ تعالیٰ ہم سب کو صرا ط مستقیم پر چلنے کی توفیق دے ۔ آمین۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: