بِسم اللہ کی تاثیر

بادشا روم قیصر نے حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ کو ایک خط بھیجا جس میں لکھا تھا کہ میرے سر میں درد رہتا ہے، کوئی علاج بتائیں. حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ نے بادشاہ کو ایک ٹوپی بھیجی

اور کہا کہ اسے سر پہ رکھا کرو سر درد جاتا رہے گا چنانچہ بادشاہ جب سر پر وہ ٹوپی رکھتا تو درد ختم ہو جاتا اور جب اتارتا تو درد دوبارہ شروع ہو جاتا. بادشاہ کو اس سب سے بڑا تعجب ہوا اور اسی تجسس میں جب بادشاہ قیصر روم نے ٹوپی چیری تو اس کے اندر ایک رُکّا پایا جس پر بِسم اللہ الرحمان الرحیم تحریر کیا ہوا تھا .بس یہی بات بادشا قیصر روم کے دل میں گھر کر گئی اور وہ سوچنے لگا کہ دین اسلام اس قدر محترم ہے کہ اس کی تو ایک آیت ہی باعثِ شفاء ہے تو پھر پورا دین نجات کیوں نا ہو گا اور اس نے اسلام قبول کر لیا.(سُبحان اللہ)

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: