ایمان کیاہے

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم سے لوگوں نے دریافت کیا کہ ایمان کیا ہے آپ نے فرمایا کھانا کھلانا اور نماز شب اداکرنا یعنی تہجد کی نماز ادا کرنا۔رسول کریم صلی اللہ علیہ وسلم سے عرض کیا گیا ایسے عمل سے متعلق جس سے گناہوں کا کفارہ ہو جائے اور درجات بلند ہوں فرمایا .

کھانا کھلانا رات کو نماز ادا کرنا جب لوگ سو رہے ہوتے ہیں آپ سے حج مبرور کے بارے میں دریافت کیا گیا تو ارشاد فرمایا کھانا کھلانا اور خوش کلامی کرنا۔ حضرت انس نے فرمایا ہے کہ جس گھر میں مہمان نہ آئے اس میں ملائکہ رحمت نہیں آتے بس ضیافت اور کھانا کھلانے کے متعلق بے شمار روایات وارد ہوئی ہے شاعر کہتا ہے۔” کیوں نہ میں محبت کرو مہمان سے میں اسے خوشی و مسرت کیوں نہ حاصل کرو مہمان اپنی ہی روزی کھایا کرتا ہے اور پھر بھی وہ میرا شکر گزار ہوتا ہے اس پر”۔داناؤں نے کہا ہے احسان مسرور چہرے کے ساتھ کیا گیا ہو تو پھر ہی مکمل ہوتا ہے خوش کلامی کے ساتھ کیا جائے ملاقات پر نوازش کا اظہار ہو رہا ہوں ایک شاعر نے اچھا ہی کہا ہے۔” اپنے مہمان کے کچاوے کو نیچے اتارنے سے قبل ہی میں اس کو ہنسا دیتا ہوں میرے پاس وہ بشاش ہوتا ہے حالانکہ یہاں سماع طاری ہوتا ہے”۔” اور بستی کثیر ہوں تو انہیں مہمانوں کے واسطے شادابی موجود نہیں ہوتی ہے بلکہ شادابی تو کرم گستر شخص کے چہرے پر ہوتی ہے”۔ جو آدمی دعوت دے اسے متقی لوگوں کو ہی مدعو کرنا چاہیے نہ کہ بدقماش لوگوں کو رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کا ارشاد پاک ہے تیرا کھانا صرف نیک لوگ ہی کھائیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: