زن مرید کا واقعہ

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا ہے زن مرید ہلاک ہوگیا اس کی وجہ یہ ہے کہ جو مرد اپنی بیوی کی ہر نفسانی خواہش کو تسلیم کرتا جائے بالآخر وہ عورت کا غلام اور بندہ ہو کر رہ جاتا ہے وجہ ہے کہ اللہ کی جانب سے تو آدمی کو عورت کا مالک بنایا گیا ہے لیکن وہ ہے کہ اس نے عورت کو اپنا مالک بنا لیا اس نے الٹ کیا اور اللہ کی حکمت کے برعکس وہ شیطان کا اطاعت گزار ہو گیا۔ جیسے کہ شیطان کا قول منقول ہوا ہے اور میں ان کو ضرور حکم کروں گا کہ وہ پھیر دیں گے اللہ کی پیدائش کو اور مرد کو متبوع ہونے کا حق حاصل ہے نہ کہ تابع مہمل۔ مردوں کے لیے اللہ نے فرمایا ہے۔

( مرد حاکم ہیں عورتوں پر)۔

اور خاوند کو سردار کہا گیا ہے۔

اللہ نے فرمایا ہے۔( ان دونوں نے اس کے سردار یعنی خاوند کو دروازے کے نزدیک پایا)۔یہ یوسف علیہ السلام کے بارے میں بیان ہے جب وہ شاہی گھر سے باہر کو بھاگے اور زلیخا ان کے تعاقب میں تھی پس جس وقت سردار ہی حکم کا تابع بن جاتا ہے تو وہ نعمت الہی کی تکذیب کرتا ہے۔عورت کے پاس بھی تمہارے جیسا نفس ہوتا ہے اگر اس کو تھوڑا سا بے لگام بھی کرو گے تو وہ زیادہ سرکشی اختیار کر لے گی اور اگر بالکل ہی ڈھیل دے دیں تو تمہارے ہاتھ سے وہ بالکل نکل جائے گی۔امام شافعی نے فرمایا ہے کہ تین چیزیں وہ ہے کہ تو ان کی اگر عزت افزائی کرے گا تو وہ تمہاری بےعزتی کریں گی اور اگر تو نے ان کی توہین کی تو تجھے عزت دیں گی۔ عورت اور خاوند اور گھوڑا امام صاحب کی مراد یہ ہے کہ اگر تو ان کے ساتھ نرمی ہی برتتا رہا اور سختی نہ رکھیں اور مہربانی کرنے کے ساتھ ساتھ گرفت بھی قائم نہ رکھیں تو اسی طرح ہوگا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: