ایڈ پر کلک کر کے پیسے کمانے کا حکم

سوال:
ایک کمپنی ہے payslashukکے نام سے یہ ایک online advertising agencyہے جو لوگوں سے پیسے لیتی ہے پھر ان کو روزانہ 5 ایڈ بھیجتی ہے جس پر کلک کرنا ہوتا ہے جو ایک ایک منٹ کا ایڈ ہوتا ہے یعنی ٹوٹل 5 منٹ لگتے ہیں مگر ایڈ میں آپکو ویڈیو آڈیو کچھ بھی دکھائی یا سنائی نہیں دیتا، یعنی پتہ نہیں چلتا کہ یہ ایڈ کس چیز کا تھا، کمپنی آپ کی انویسٹمنٹ کے حساب سے منافع دیتی ہے جو فکس نہیں یعنی 0.6فیصد سے لیکر 0.8 فیصد روزانہ آپ کی انویسٹمنٹ کے حساب سے دیتی ہے ،اور جس ایڈ کلک نا کریں اس دن کا منافع نہیں ملتا اور آپ اپنی انویسٹمنٹ ایک سال سے پہلے نہیں نکال سکتے ، ہاں جو منافع ہوا ہے وہ آپ نکال سکتے ہیں.

کیا اس کمپنی میں انویسٹمنٹ کرنا جایز ہے کمپنی جو منافع دے رہی ہے کیا ہمارے لیے وہ جایزہے ، کمپنی دعوی کرتی ہے کہ وہ secpاور FBRکے ساتھ رجسٹرڈ ہے ، اور کوئی نا جائز بزنس نہیں کرتی جبکہ ہمارے علم میں نہیں کہ کمپنی کیا بزنس کرتی ہے اور نا ہم معلوم کر سکتے ہیں کہ رجسٹرڈ بھی ہے یا نہیں براہ کرم رہنمائی فرمائیں، اگر جلدی اور emailمیں بھی جواب مل جائے تو بندہ مشکور ہوگا
جواب نمبر: 600080 بسم الله الرحمن الرحيم : سوال میں کمپنی کا جو طریقہ کار ذکر کیا گیا ہے وہ متعدد شرعی قباحتوں پر مبنی ہے مثلا خلاف مقتضائے عقد شرط، جہالت غرر وغیرہ، نیز اشہتارات(جن پر کلک کی جاتی ہے ) ناجائز اور حرام چیزوں کے بھی ہوسکتے ہیں ، ایسی صورت میں ناجائز چیزوں کو فروغ دینا بھی پایا جائے گا ؛اس لیے اس کمپنی میں انویسٹ کرنا اور نفع کمانا شرعا جائز نہیں ہے ۔(و) لا(بیع بشرط) عطف علی إلی النیروز یعنی الأصل الجامع فی فساد العقد بسبب شرط لا یقتضیہ العقد ولا یلائمہ وفیہ نفع لأحدہما أو) فیہ نفع (لمبیع) ہو (من أہل الاستحقاق) للنفع بأن یکون آدمیا،…(ولم یجرالعرف بہ و) لم (یرد الشرع بجوازہ) ․ (الدر المختار مع رد المحتار) 7/ 281،مطلب فی البیع بشرط فاسد،مطبوعة:مکتبة زکریا، دیوبند) واللہ تعالیٰ اعلم . دارالافتاء، دارالعلوم دیوبند

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: