آپﷺ اتنا کیوں روئے؟

صحیح بخاری شریف میں ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم اکثر یہ دعا کیا کرتے تھے ۔ ( اے ہمارے پروردگار ہم کو دنیا کے اندر نیکی عطا فرما اور آخرت میں نیکی اور ہم کو آگ کے عذاب سے بچا )۔ مسند ابی یعلیٰ میں یوں آیا ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنے خطاب میں فرمایا دو عظیم چیزوں کو فراموش نہ کرنا جنت اور دوزخ اور آپ اتنا روئے کے ریش مبارک کے دونوں جانب ھی آنجناب کے آنسو بہنے لگے ۔

پھر فرمایا قسم ہے اس ذات کی جس کے قبضے میں میری جان ہے اگر تم وہ کچھ معلوم ہوتا قیامت کے بارے میں جو میں جانتا ہوں تو تم میدانوں کی جانب جانکلتے اور اپنے سروں پر خاک ڈال لیتے۔ طبرانی اوسط میں کہا گیا ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی بارگاہ میں ایک ایسے وقت پر جبرائیل علیہ السلام حاضر ہوئے جس وقت ان کا آنا معمول نہ تھا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کھڑے ہوگئےاور پوچھا کیا بات ہے کہ تمہارا رنگ تبدیل شدہ میں دیکھتا ہوں عرض کیا آپ حضور کی خدمت میں ایسے وقت حاضر ہوا جب کہ اللہ نے دوزخ کی دھونکیوں کو آتش بھڑکا دینے کے لیے حکم فرمادیا ہے۔رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا اے جبریل دوزخ کی صفت بیان تو کرو۔

جبرئیل علیہ السلام نے عرض کیا اللہ نے دوزخ میں آگ جلانے کے لئے فرمایا تو ایک ہزار سال تک آگ کو جلایا گیا یہاں تک کہ وہ سفید ہو گئی ۔ پھر حکم فرمادیا گیا تو مزید ایک ہزار برس آگ جلائ گئی یہاں تک کہ وہ سرخ رنگ ہوگئی پھر حکم فرمادیا تو ایک ہزار سال تک آگ کو جلایا گیا تو وہ سیاہ ہو گئی اب وہ سیاہ ظلمت ہے اسے اب اس کے شرارے بھی روشن نہیں کرتے ہیں اور اس کے شعلے بھی نہیں بچتے قسم ہے اس ذات کی جس نے آپ جناب آپ کو نبی کی حیثیت سے مبعوث فرمایا اگر داروغہ دوزخ دنیا والوں کے سامنے نمودار ہو جائے تو اس کے چہرے کی ہیبت اور اس کی سخت بدبو کی وجہ سے سارے زمین والے مر ہی جائیں گے مجھے اس ذات کی قسم ہے جس نے آپ حضور کو نبی برحق بنایا۔

اور مبعوث فرمایا اگر دوزخ والوں کی زنجیر کا صرف ایک ہی حلقہ جو کتاب میں مذکور ہے دنیا کے پہاڑوں پر رکھا جائے تو پہاڑ بھی بہ نکلیں گے اور برقرار نہ رہ سکیں گے یہاں تک کہ وہ سب سے نیچے والی زمین پر جا نکلیں۔ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا اے جبرئیل کافی ہے ایسا نہ ہو کہ میرا دل پھٹ جائے کہ میں مر ہی جاؤں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: