کیا آپ اپنے واٹس ایپ اسٹیٹس پر گانے رکھتے ہیں

کیا آپ اپنے سوشل میڈیا پر فحش مواد و لطائف وغیرہ شیئر کرتے ہیں؟ کیا آپ جب کبھی کوئی فلم دیکھنے جاتے ہیں تو سوشل میڈیا پر تصاویر وغیرہ کے ذریعے تمام لوگوں کو بتاتے ہیں کہ آج آپ نے معصیت الہی کا کام کیا ہے؟کیا آپ جن فلمی اداکاروں و اداکاراؤں سے محبت کرتے ہیں آپ انہیں سوشل میڈیا پر پروموٹ کرتے ہیں؟ کیا آپ اپنے گھر کے خوشی کے موقع پر زور دار آواز میں موسیقی (ڈی جے) بجاتے ہیں؟

کیا آپ اپنی کار چلاتے وقت بلند آواز میں گانے سنتے ہیں؟ تو ذرا رکئے اور اس حدیث پر غور کیجئے، نبی ﷺ نے ارشاد فرمایا : میری تمام امت کو معاف کیا جائے گا سوا گناہوں کو کھلم کھلا کرنے والوں کے اور گناہوں کو کھلم کھلا کرنے میں یہ بھی شامل ہے کہ ایک شخص رات کو کوئی ( گناہ کا ) کام کرے اور اس کے باوجود کہ اللہ نے اس کے گناہ کو چھپا دیا ہے مگر صبح ہونے پر وہ کہنے لگے کہ اے فلاں! میں نے کل رات فلاں فلاں برا کام کیا تھا۔ رات گزر گئی تھی اور اس کے رب نے اس کا گناہ چھپائے رکھا، لیکن جب صبح ہوئی تو وہ خود اللہ کے پردے کو کھولنے لگا۔ “( صحیح بخاری حدیث نمبر : 6069 )

میرے بھائیوں ڈرو اس الله سے جس کی پکڑ بڑی شدید ہے۔ الله فرماتا ہے،إِنَّ بَطۡشَ رَبِّكَ لَشَدِيدٌ یقیناً تیرے رب کی پکڑ بڑی سخت ہے.( 85 : 12 )ڈرو اس رب سے جو سمیع ( سب کچھ سننے والا) و بصیر ( سب کچھ دیکھنے والا) ہے ۔ ڈرو اس رب سے جو مالک یوم الدین ہے۔ الله ہمیں عمل کی توفیق عطا فرمائے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: