سوتے وقت کی سنتیں

آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے حضرت براء بن عازب رضی تعالی عنہ کو حکم دیا کہ جب (بھی سونے کے لئے) تم بستر پر جاؤ تو وضو کر لو جس طرح تم نماز کے لیے وضو کرتے ہو_ (بخاری، مسلم )۔(وضاحت : ہمیشہ با وضو سوئے یہ مسنون عمل ہے(بخاری )٢ ۔ وضو پر وضو کرنے سے دس نیکیاں لکھی جاتی ہیں۔: لیکن ایک وضو سے کئی نمازیں پڑھنا بھی آپ صلی اللہ علیہ وسلم سے ثابت ہے ۔

٣۔ بستر بچھا یا لپٹا ہوا ہو تو لیٹنے سے پہلے اس کو تہبند (کپڑے )کے ایک کنارے سے جھاڑ لیں(بخاری )
۔ جو کسی بستر پر لیٹے اور اللہ تعالی کا ذکر نہ کرے تو اس پر اللہ تعالی کی طرف سے حسرت ہوتی ہے ۔٤۔ آپ صلی اللہ علیہ وسلم ہر رات جب بستر پر لیٹتے تھے تو دونوں ہاتھوں کو دعا مانگنے کی طرح ملا کر سورۃ اخلاص، سورۃ الناس، سورۃ الفلق (پوری پوری سورتیں ) پڑھ کر ہاتھوں پر دم کر کے پہلے سر پھر بدن کے اگلے حصے پھر بدن کے باقی حصے پر جہاں جہاں ہاتھ پھیرا جاتا پھر لیا کرتے تھے آپ صلی اللہ علیہ وسلم” تین “بار کرتے تھے۔ بخاری”

٥۔ آپ صلی اللہ علیہ وسلم سونے سے پہلے سورۃ ملک (سورۃ نمبر ٦٧) اور الف لام میم تنزیل السجدہ (سورت نمبر 32 )پڑھا کرتے تھے
“نوٹ”: یہ دونوں سورتیں اپنے پڑھنے والوں سے عذاب قبر کو روکتی ہیں_٦۔ جو آدمی اپنے بستر پر لیٹتے وقت آیت الکرسی( سورۃ البقرہ ٢: 255) لے تو اللہ تعالی کی طرف سے ایک فرشتہ مقرر کر دیا جاتا ہے جو رات بھر اس کی حفاظت کرتا ہے ۔اور صبح تک اس کے پاس شیطان نہیں آتا

٨-سورۃ بقرہ کی آخری دو آیات سونے سے پہلے پڑھنے والے کو اللہ تعالی تمام آفتوں سے محفوظ رکھتے ہیں ۔ جس گھر میں تین راتوںتک یہ آیات پڑھی جائیں تو شیطان اس گھر کے قریب سے بھی نہیں گزرے سکتا٩۔ آپ صلی اللہ علیہ وسلم سوتے وقت اپنا دایاں ہاتھ اپنے دائیں رخسار کے نیچے رکھ کر قبلہ کی طرف منہ کر کے دائیں کروٹ پر سوتے اور یہ دعا تین بار پڑھتے تھے ۔ رَبِّ قِنِیْ عَذَابَکَ یَوْمَ تَبْعَثُ عِبَادَکَ۔ (ترجمہ )”اے اللہ مجھے اپنے عذاب سے بچانا جس دن آپ اپنے بندوں کو قبروں سے اٹھائیں گے “اور ایک مرتبہ یہ دعا بھی پڑھتے تھے :اللّٰھُمَّ بِاسْمِکَ اَمُوْتُ وَاَحْیَا(ترجمہ ):ہے اللہ آپ کے نام کے ساتھ ہی میں مرتا( سوتا )اور زندہ ہوتا(جاگتا ) ہوں:( بخاری )

١٠۔سیدہ فاطمہ رضی اللہ عنہا نے آپ صلی اللہ علیہ وسلم سے اپنی تھکاوٹ کی شکایت کی اور خادمہ کی درخواست کی تو آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا :””اے فاطمہ رضی اللہ عنہا سوتے وقت 33 مرتبہ سبحان اللہ اور 33 مرتبہ الحمد للہ اور 34 مرتبہ اللہ اکبر پر لیا کرو تمہاری تھکاوٹ دور ہو جائے گی” (بخاری ،مسلم )(“نوٹ:”) ہر طرح کی جسمانی کمزوری میں بھی یہ وظیفہ بار بار پڑھے مجرب ہے اس لئے کہ دلوں کو اطمینان تو اللہ تعالی کے ذکر سے ہی ملتا ہے )۔۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: