ماں کی محبت

امیر المومنین سیدنا عمر بن خطاب رضی اللہ تعالی عنہ بیان کرتے ہیں کہ ایک جنگ میں رسول صلی اللہ علیہ وسلم کی خدمت میں چند قیدیوں کو گرفتار کر لیا گیا. ان میں ایک خاتون بھی تھیں جب کبھی وہ کسی بچے کو دیکھتی تو اسے دودھ پلانے لگتی قیدیوں میں سے جس بچے کو باتیں اسے اپنی گود میں لے لیتی وہ اپنے پیٹ سے چمٹا کر دودھ پلانے لگتی-

نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے جب اس خاتون کی بچے کے لیے بے چین ہیں دیکھیں تو آپ نے اپنے صحابہ کرام سے دریافت فرمایا تمہارے خیال میں کیا یہ خاتون اپنے بچے کو آگ میں پھینک سکتی ہے صحابہ کرام نے عرض کیا نہیں ہوسکتا اس خاتون سے کہیں زیادہ رحم کھانے والا ہے اور جو ابھی اپنے بچے پر رحم رحم کا اظہار کر رہی ہے

ماں کی محبت امیر المومنین سیدنا عمر بن خطاب رضی اللہ تعالی عنہ بیان کرتے ہیں کہ ایک جنگ میں رسول صلی اللہ علیہ وسلم کی خدمت میں چند قیدیوں کو گرفتار کر لیا گیا ان میں ایک خاتون بھی تھیں جب کبھی وہ کسی بچے کو دیکھتی تو اسے دودھ پلانے لگتی قیدیوں میں سے جس بچے کو باتیں اسے اپنی گود میں لے لیتی وہ اپنے پیٹ سے چمٹا کر دودھ پلانے لگتی نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے جب اس خاتون کی بچے کے لیے بے چین ہیں دیکھیں تو آپ نے اپنے صحابہ کرام سے دریافت فرمایا تمہارے خیال میں کیا یہ خاتون اپنے بچے کو آگ میں پھینک سکتی ہے.

صحابہ کرام نے عرض کیا نہیں یہ کبھی نہیں ہوسکتا کہ یہ خاتون اپنے بچے کو آگ میں پھینک دے۔ تو آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا بلاشبہ اللہ تعالی اپنے بندوں پر اس خاتون سے کہیں زیادہ رحم کھانے والا ہے اور جو ابھی اپنے بچے پر رحم کا اظہار کر رہی ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: