خوش رہنا مشکل نہیں

ماہرین کہتے ہیں آپ کے آس پاس کے حالات پر آپ کا اختیار صرف ١٠ فیصد ہوتا ہے لیکن خوش رہنے کا ٩٠ فیصد اختیار آپ کے اپنے پاس ہے, خوش رہنا ایک آرٹ ہے .اس آرٹ کو سکھانے والے ماہرین چند سائنسی تحقیق پر ثابت شدہ ٹپس بتاتے ہیں، ضروری نہیں سب آپ کے کام کی ہوں مگر کوشش ضرور کیجئے کوئی نا کوئی ایک ٹپ ضرور کام کرے گی، انشاءاللہ

1.دن میں ایک بار اپنی دستیاب نعمتیں شمار کر کے لکھ لیں

  1. رات میں چھ سے آٹھ گھنٹے بھرپور نیند لیں اور دوپہر میں بیس سے تیس منٹ آرام ضروری کریں

3۔ رات گیارہ بجے سے 3 بجے تک ضرور سو لیا کریں کیونکہ اس وقت کی نیند کی اہمیت اسلام اور جدید سائنسی علوم کی روشنی میں ثابت ہے۔

  1. ہفتے میں کم از کم تین بار گھر کے سب افراد کے ساتھ بیٹھ کر کھانا کھائیں
  2. گھر میں گارڈن بنائیں دن کا کچھ وقت پودوں کے ساتھ گزاریں
  3. ہر روز کم از کم پانچ سے سات منٹ ہلکی ورزش ضرور کیا کریں
  4. دن میں کسی نہ کسی ضرورت مند کی مدد ضرور کریں۔
  5. ذرا سی اداسی آنے پر وضو کر لیا کریں
  6. اپنی پسند کی خوشبو لگایا کریں
  7. پانی زیادہ پئیں کم از کم تین لیٹر جب اداس ہوں تو دو گلاس پئیں
  8. ” نو کمپلین ڈے ” بنائیں, آج کسی سے کوئی شکایت نہیں پھر دن بڑھاتے جائیں, پہلے “نو کمپلین ویک”, پھر “نو کمپلین منتھ”۔ آپ جلد عادتا غیر شکایتی بن جائیں گے۔
  9. گھر میں دفتر میں جدت ترازی کی مہم چلائیں, ہر روز ماحول میں کچھ تبدیلی کی کوشش کریں, گھر میں موجود سامان کی ترتیب بدلتے رہا کریں
  10. خاندان، دوست احباب، رشتہ داروں کو فون کریں ان کے دکھ درد میں حوصلہ دیں اور خوشیوں پر کھل کر مبارکباد پیش کریں
  11. مہینے میں ایک دو بار دعوت کریں, کبھی رشتے داروں کو، کبھی دوست احباب کو کبھی اپنے بچوں کے دوستوں کو دعوت پر بلائیں
  12. لوگ کیا کہیں گے..! یہ سوچنا چھوڑ دیں۔ لوگ کبھی کسی کو نہیں بخشتے۔
  13. اپنی زندگی کا سب سے خوشگوار دن یاد کیجئے اور ایسا زندگی بھر ہر روز کیا کیجیئے, چھوٹی سے چھوٹی خوشی کو بھی یاد کریں, یہ یادیں آپ کو سارا دن خوش رکھیں گی۔
  14. صدقہ دیں اور سب سے آسان صدقہ مسکراہٹ ہے, ہلکی سی ایک مسکراہٹ تیز دھوپ میں بادل کے ٹکڑے کی طرح دل کو ترو تازہ کردیتی ہے, خوش رہیں اور خوشیاں بانٹیں

18۔ اپنے خالق، مالک اور رازق سے اپنا تعلق ہر حال میں برقرار رکھیں۔

19۔ پانچوں نمازیں وقت پر ادا کیا کریں۔ اور بہتر یہ ہے کہ باجماعت۔

20۔ اپنے اہل و عیال کا، قرابتداروں کا، ہمسائیوں کا، مرحومین کا خیال رکھا کریں، بلکہ پوری امت کے بارے میں فکر مند رہا .

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: