اللہ تعالیٰ کیسے جواب دیتاہے

ایک دن حضرت موسی ؑ نے اللہ سے پوچھا، الٰہی جب کوئی تیرا فرمابردار بندہ تجھے پکارتا ہے ،تو جواب کیسے دیتا ہے ،اللہ نے فرمایا،میں جواب میں کہتا ہوں،لبیک میں موجود ہوں، بولو کیا مانگتے ہو حضرت موسی ؑ نے پوچھا اور اگر کوئی تیرا گنہگار بندہ تجھے پکارے تو اسے جواب میں کیا فرماتا ہے۔

اللہ نے فرمایا،گنہگار کے جواب میں دو مرتبہ فرماتا ہوں،لبیک لبیک یا عبدی۔ موسیؑ نے پوچھا،الہی !گنہگار کے جواب میں دو مرتبہ کیوں؟ اللہ پاک نے فرمایا کہ موسی یہ اِس لیے کہ میرے فرمابردار بندے کو تو اپنے نیک عمل پر بھی بھروسہ ہوتا ہے اور گنہگار کو تو صرف میری رحمت پر ہی بھروسہ رہتا ہے پھر جسے صرف میری رحمت پر ہی بھروسہ ہو اِس کے لیے میری رحمت کیوں جوش میں نہ آئے۔ ‏ﺍﮮ ﺭﺏ ﺫﻭﺍﻟﺠﻼﻝ! ﮨﻤﺎﺭﯼ ﺧﻄﺎﺋﯿﮟ ﺑﺨﺶ دے،ﮨﻤﺎﺭﯼ ﺗﻮﺑﮧ ﻗﺒﻮﻝ ﻓﺮﻣﺎ، ﻋﻠﻢِ ﻧﺎﻓﻊ،ﺻﺤﺖِ ﮐﺎﻣﻞ، ﺭﺯﻕِ ﺣﻼﻝ اور ﮨﻢ ﭘﺮ ﺭﺣﻢ ﮐﺮ ﯾﺎ ﺭﺣﯿﻢ! آميــــــــــن

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: