مالدار مسلمان اور مالی عبادت

حضرت ابو ہریرہؓ سے روایت ہے ، انھوں نے فرمایا کہ کچھ نادار لوگ نبیﷺ کے پاس آئے اور کہنے لگے که مال دار لوگ تو بڑے بڑے درجات اور دائمی عیش لے گئے کیونکہ ہماری طرح وہ نماز پڑھتے ہیں اور ہماری طرح وہ روزے بھی رکھتے ہیں۔

لیکن ان کے پاس مال ودولت کی فراوانی ہے جس سے وہ حج ، عمرہ ، جہاد اور صدقہ و خیرات بھی کرتے ہیں ۔ اس پر آپﷺ نے فرمایا : کیا میں تمھیں ایسی بات نہ بتاؤں کہ اس پرعمل کر کے تم ان لوگوں تک جاؤ گے جو تم سے سبقت لے گئے ہیں ۔ اور تمھارے بعد تمھیں کوئی نہیں پا سکے گا ۔ اور تم جن لوگوں میں ہو ان سے بہتر ہو جاؤ گے سوائے اس شخص کے جو اس کے مثل عمل کرے (وہ تمھارے برابر ہو سکے گا)۔ تم ہر نماز کے بعد 33 بار سبحان الله 33 بار الحمدالله اور 33 بار الله أكبر پڑھ لیا کرو ۔ راوی کہتا ہے کہ پھر ہمارا باہمی اختلاف ہو گیا۔

ہم میں سے بعض نے کہا کہ ہم 33 مرتبہ سبحان الله ، 33 مرتبه الحمد لله اور 34 مرتبه الله اکبر پڑھیں گے ، چنانچہ میں نے دوبارہ اپنے استاد سے پوچھا تو انھوں نے فرمایا کہ سبحان الله والحمد لله والله أكبر پڑھا کرو حتی کہ ان میں سے ہر ایک 33 مرتبہ ہو جائے۔ الراوي : أبو هريرة. المصدر : صحيح البخاري 843 [صحيح]

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: