ایک بدو اور آپ ﷺ

ایک بدو نے نبی پاک صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم سے پوچھا: “حشر میں حساب کون لے گا؟” آپ صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے فرمایا: ” اللہ ” بدو خوشی سے جھوم اٹھا اور چلتے چلتے کہنے لگا: “بخدا تب تو ہم سب نجات پا گئے” آپ صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے پوچھا: “وہ کیسے؟”

اس نے عرض کیا: “اللہ کریم ہے اور کریم جب قابو پا لیتا ھے تو معاف کر دیتا ہے” بدو چلا گیا مگر جب تک نظر آتا رہا حضور صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم اس کا جملہ دہرا کر فرماتے رھے ” قد وجد ربہ .. قد وجد ربہ ” اس نے رب کو پہچان لیا ۔ اس نے رب کو پہچان لیا

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: