حضرت علی رضہ کی نصیحتیں

حضرت علی رضہ نے حضرت عمر رضہ سے مخاطب ہوکر کہا اے امیرالمومنین!

اگر آپ کی خوشی یہ ہے کہ آپ اپنے دونوں ساتھیوں حضور صلی اللہ علیہ وسلم اور حضرت ابو بکر رضی اللہ عنہ سے جاملیں تو آپ اپنی امید میں مختصر کر میں اور کھانا کھائیں لیکن پیٹ نہ بھر یں اورلنگی بھی چھوٹی پہنیں اور کرتے پر پیوند لگا ئیں اور اپنے ہاتھ سے جوتی گا نٹھیں اس طرح کر یں گئے تو ان دونوں سے جاملیں گے ۔ اخرجہ ہیلی کذافی الکنر ۸ ۲۱۹) حضرت علی رضی اللہ عنہ نے فرمایا خیر یہ نہیں ہے کہ تمہارا مال اور تمہاری اولاد زیادہ ہو جائے بلکہ خیر یہ ہے کہ تمہاراعلم زیادہ ہو اور تمہاری بردباری کی صفت بڑی ہو اور اپنے رب کی عبادت میں تم لوگوں سے آگے نکلنے کی کوشش کرو ۔ اگر تم سے نیکی کا کام ہو جاۓ تو اللہ کی تعریف کر واوراگر برائی کا کام ہو جاۓ تو اللہ سے استغفار کرواور دنیا میں صرف دو آدمیوں میں سے ایک کے لئے خیر ہے ایک تو وہ آدمی ہے جس سے کوئی گناہ ہو گیا اور پھر اس نے توبہ کر کے اس کی تلافی کر لی دوسرا وہ آ دی جو نیک کاموں میں جلدی کرتا ہو اور جوگل تقوی کے ساتھ ہو وہ کم شمارنہیں ہوسکتا کیونکہ جوعمل اللہ کے ہاں قبول ہو وہ کیسے کم شمار ہوسکتا ہے ۔ ( کیونکہ قرآن میں ہے کہ اللہ متقیوں کے عمل کو قبول فرماتے ہیں ) (اخرجہ ابوھیم فی الحلیة /۷۵) حضرت علی رضی اللہ عنہ نے فرمایاتوفیق خداوندی سب سے بہترین قائد ہے اور اچھے اخلاق بہترین ساتھی میں عقلمندی بہترین مصاحب ہے حسن ادب بہترین میراث ہے اور عجب و خود پسندی سے زیادہ سخت تنہائی اور وحشت والی کوئی چیز ہیں۔(عنایتی وابن عساکر کذافی الکنر ۲۳۹۸) حضرت علی رضی اللہ عنہ نے فرمایا اسے مت دیکھو کہ کون بات کر رہا ہے بلکہ یہ دیکھو کہ کیا بات کہہ رہا ہے۔ حضرت علی رضی اللہ عنہ نے فرمایا ہر بھائی چارہ ختم ہو جا تا ہے صرف وہی بھائی چارہ باقی رہتا ہے جولالچ کے بغیر ہو۔

(اخرجہ ابن المعانی فی الدلائل )

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: