عیسائ راہب نسطورا کا ایمان افروز واقعہ

گرجے کا سامنے والا درخت بالکل سوکھ چکا تھا ,اردگرد کا ماحول بھی بہت ویران دکھائی دیتا تھا.

مگر حضورصلی اللہ علیہ وسلم کے تشریف لاتے ہی ساں بالکل بدل گیا…..سوکھا سڑا درخت پھر سے ہرا بھرا ہوگیا…. گرد و پیش کے ماحول میں بھی سرسبزی و شادابی کھانے گی….. یوں دکھائی دیتا تھا جیسے کسی اجڑے چمن میں بہار خزاں پر غالب آ رہی ہے …..

راہب نسطورا اپنے گر جے کے بالا خانے میں بیٹھا یہ سب کچھ دیکھ رہا تھا….. ہکا بکا رہ گیا۔…. وہ بھاگتا ہوا سیدھا حضور ﷺ کی خدمت میں حاضر ہوا اور کہنے لگا۔۔۔۔۔۔ آپ کو لات و عزی کی قسم دیتا ہوں…. بتلائے آپ کا نام کیا ہے؟ آنحضور ﷺکو یہ با ت سخت ناگواری گزری…. آپ ﷺ نے فر مایا…..دور ہٹو مجھ سے! مجھے یہی لغو بات سب سے زیادہ مکروہ و نا گوار ہے . نسطورا اپنے ہاتھ میں اپنی مقدس کتاب تھامے ہوئے تھا…. وہ بھی آنحضور ﷺ کی طرف دیکھتا اور کبھی کتاب کی طرف….وہ بار بار کہا جاتا ….. خدا کی قسم ! یہی
آخرالزماں نبی ہیں…. جن کی بشارت ہماری مقدس کتابوں میں دی گئی ہے ….. خزیمہ بھی بڑے غور سے نسطورا کو تک رہا تھا….اسے خدشہ ہوا کہ چالاک راہب کہیں حضور ﷺ سے کوئی مکر وفریب نہ کر بیٹھے…. غصے میں آ کر اس نے اپنی تلوارتان لی….اس قافلہ کے باقی ساتھی بھی اشتعال میں آگئے …. وہ نسطورا کی جانب لپکے …..ماے ڈر کے نسطورا بھاگ کر گرجے کے اندر جا گھسا… پھر وہ بالا خانے پر چڑھ کر زور زور سے پکارنے لگا …… خدا کی قسم ! میرے نزدیک تم سے پیارا قافلہ کوئی خدا کا رسول اور آخری نبی ہے نہیں ….. اس مقدس کتاب میں مذکور پاۓ گا اور اس کا دشمن ہلاکت ….

نسطورا کی ان خیال انگیز باتوں سے اس کے بارے میں اہل قافلہ کی بدگمانی جاتی رہی….. راہب نے پھر خزیمہ اور میسرہ کو اپنے پاس بلا کر ان سے آنحضور ﷺکے بارے میں بہت سے سوال پوچھے اور راز داری کے عالم میں بڑی معنی خیز باتیں کیں….اس نے کہا…. ہماری مقدس کتاب میں لکھا ہے کہ یہ مبارک شخص تمام شہروں پر قبضہ کر لے گا اور تمام لوگوں کو اپنا گرویدہ بنالے گا….. اس کے بلند و بالا مرتبے سے کوئی واقف نہیں …. اس کے دشمن بہت ہیں…. جن میں اکثر و بیشتر یہودی ہیں ….. میں قسم کھا کر کہتا ہوں کہ یہ آخری نبی ہیں …. کاش! میں ان کے عہدبعثت تک زندہ رہوں اور ان کی اطاعت کروں …. نسطورا نے یہ مشورہ بھی دیا کہ آنحضور ﷺ شام نہ جائیں وہاں بہت یہودی ان دشمن ہیں …..

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: