حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا کی واعظ مدینہ کو تین اہم نصیحتیں

حضرت عائشہ رضی اللہ تعالی عنہا نے مدینہ والوں کے واعظ حضرت ابن ابی سائب رحمہ اللہ تعالی سے فرمایا:

تین کاموں میں میری بات مانو ورنہ میں تم سے سخت لڑائی کروں گی۔ حضرت ابن ابی سائب رحمہ اللہ تعالی نے عرض کیا، وہ تین کام کیا ہیں ؟ ام المومنین میں آپ کی بات ضرور مانوں گا۔ حضرت عائشہ رضی اللہ تعالی عنھا نے فرمایا: پہلی بات یہ ہے کہ تم دعاء میں یہ تکلیف قافیہ بندی سے بچو، کیونکہ حضوراکرم صلی اللہ علیہ وسلم اور آپ صلی اللہ علیہ وسلم کے صحابہ اس طرح قصد انہیں کیا کرتے تھے۔ دوسری بات یہ ہے کہ ہفتہ میں ایک دفعہ لوگوں میں بیان کیا کرو اور زیادہ کرنا چاہوتو دودفعہ ورنہ زیادہ سے زیادہ تین دفعہ کیا کرو اس سے زیادہ نہ کرو ورنہ لوگ ان کی اس کتاب سے اکتا جائینگے۔ تیسری بات یہ ہے کہ ایسا ہرگز نہ کرنا کہ تم کسی جگہ جاؤ ، اور وہاں والے آپس میں بات کر رہے ہوں اور تم ان کی بات کاٹ کر اپنا بیان شروع کر دو۔ بلکہ انہیں اپنی بات کرنے دو، اور جب وہ تمہیں موقع دیں اور کہیں تو پھر ان میں بیان کرو۔

(حیاۃ الصحابہ: ۲۳۹/۳)

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: