زیارتِ قبور کا نبوی ﷺ کا معمول

حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کا اپنا معمول مبارک تھا کہ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم بقیع کے قبرستان میں تشریف لے جاتے.

انہیں سلام کہتے اور ان کے لئے مغفرت کی دعا فرما تے اور اپنے صحابہ رضی اللہ عنھم کو بھی اس کا درس دیتے۔ ذیل میں چند احادیثِ مبارکہ ملاحظہ کریں۔

  1. ام المؤمنین حضرت عائشہ صدیقہ رضی ﷲ عنہا بیان کرتی ہیں :
    .
    ’’جب حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم میرے ہاں قیام فرما ہوتے تو (اکثر) آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم رات کے آخری حصہ میں بقیع کے قبرستان میں تشریف لے جاتے اور (اہلِ قبرستان سے خطاب کرکے) فرماتے : تم پر سلام ہو، اے مومنوں! جس چیز کا تم سے وعدہ کیا گیا ہے وہ تمہارے پاس آ گئی تم بہت جلد اسے حاصل کرو گے اور اگر ﷲ تعالیٰ نے چاہا تو ہم بھی تم سے ملنے والے ہیں۔ اے ﷲ! بقیعِ غرقد والوں کی مغفرت فرما۔‘‘
    .
  2. مسلم، الصحيح، کتاب الجنائز، باب ما يقال عند دخول القبور والدعاء لأهلها، 2 : 669، رقم : 974
  3. نسائي، السنن، کتاب الجنائز، باب الأمر بالاستغفار للمؤمنين، 4 : 93، رقم : 2039
  4. أبويعلي، المسند، 8 : 199، رقم : 4758

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: