ہر محبت دکھ دیتی ہے سواے اللہ کی محبت کے

شیخ عبدالقادر جیلانیؒ کہتے ہیں “اے شخص تو کہتا ہے میں جس سے محبت کرتا ہوں اس سے جدا کردیا جاتا ہوں۔

کبھی بیماری سے کبھی عداوت سے، کبھی غلط فہمی سے کبھی موت سے، ہر قیمت پر مجھ سے جدا کردیا جاتا ہے” ۔

اے نادان تُو تو وہ خوش قسمت ہے جس پر اللہ تعالٰی نے غیرت کھائی ہے۔ اللہ تجھے اپنے لیے چاہتا ہے اور تو غیر کا ہونا چاہتا ہے۔ ہوش کر ایسا ٹوٹا برتن بن جا جس میں ماسوائے اللہ کے کچھ نہ ٹھہرے

تو غیر کے پیچھے بھاگے گا اللہ تجھ سے اس کے ہاتھوں توڑے گا اور جب تو اللہ کا ہوجائے گا تو ساری مخلوق کو تیرے قدموں میں لا بٹھائے گا۔ تیرے رشتے، تیری محبتیں، تیری آسائشیں لوٹا دی جائیں گی۔

تیری دولت واپس لوٹا دی جائے گی اور جن سے تو محبت رکھتا تھا اور رویا کرتا تھا اب تیرے لیے روئیں گے مگر اب تیرا دل ان سے بے نیاز ہوگا۔ جب تو ان چیزوں کو دور نہ کردے گا، یہ تجھے تکلیف دیں گی۔ ہر محبت دکھ دیتی ہے سوائے اللہ کی محبت کے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: