بابرکت عورت نشانی

ایک دیہاتی آدمی کے یکے بعد دیگرے نو بیٹے پیدا ہوئے.دسویں بار رات کے وقت بیٹی پیدا ہوئی جب اس کو خبر دی گئی تو وہ چیخ کر کہنے لگا ہائے آج کی رات کتنی سیاہ ہے.

کیونکہ وہ لوگ بیٹی کو عار سمجھتے تھے.زمانہ گزر گیا بیٹوں کی شادیاں کر دیں بیٹی بھی اپنے گھر کی ہوگئی.بیٹوں نے باپ سے آہستہ آہستہ توجہ کم کرنا شروع کر دی پھر ایک وقت آیا کہ باپ اکیلا رہ گیا اور بیٹے اپنی بیویوں کے ساتھ راحت و سکون سے زندگی گزارنے لگے.مگر باپ کے کھانے پینے سونے جاگنے کا کچھ انتظام نہ تھا روزبروز بیمار پڑتا گیا حتی کہ چلنے پھرنے سے قاصر ہوگیا اور پھر رو رو کر اندھا ہوگیا اب مزید مشکلات کا سامنا ہونے لگا.اسکی بیٹی کو معلوم ہوا تو وہ دوڑی چلی آئی اور آتے ہیں باپ کا منہ صاف کیا کپڑے بدلے کھانا کھلایا اور دوائی دی پھر سر دبانے بیٹھ گئی.وہ آدمی کہنے لگا اے عزت داروں کی بیٹی تو کون ہے.اس لڑکی نے دکھ بھرے لہجے میں کہا میں آپ کی سیاہ رات ہوں.تب باپ کو معلوم ہوا یہ تو اس کی اپنی بیٹی ہے تو شرمندہ ہوا اور کہنے لگا بیٹی وہی رات تو میری روشن تھی باقی نو راتیں سیاہ تھیں.حدیث پاک میں لا تکرھوا البنات فانھن المونسات الغالیات کہ بیٹیوں کو ناپسند نہ کرو کیونکہ بیٹیاں تو بڑی پیاری اور قیمتی ہوتی ہیں.ایک روایت میں ہے. من برکۃ المرۃ ابتکارہا الانثی.یعنی عورت کی برکت یہ ہے کہ پہلی بار بیٹی پیدا کرے.یقین کیجئے کہ انسان اول اول بیٹا چاہتا ہے مگر جب بیٹی پیدا ہوتی ہے تو ساری محبتیں ساری شفقتیں بیٹی سمیت لیتی ہے
بیٹی بیٹے سے بہت پیاری ہوتی ہے..

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: