اپنا محاسبہ کیجئے

کیسی عجیب بات ھے نا کہ ھم روزے بھی رکھتے ھیں ،نماز بھی کوئی نہیں چھوڑتے، قرآن وتفسیر بھی پڑھی جا رھی ھے ،لیکن ھمارے دل ھیں کہ بدل ھی نہیں رھے،نہ حقوق العباد کا خیال نہ ھی کسی اور چیز کی پرواہ،اور کسی کا حق غصب کرنا تو ھم اپنا فرض سمجھتے ھیں.

ٹٹولئیے اپنے اپنے دل کو زندہ ھیں یا نہیں؟ اگر نہیں ذندہ تو اس کو اللہ کی مدد سے زندہ کیجئیے۔اگر آپ دیکھنا چاھتے ھیں کہ آپ کو اللہ سے کتنی محبت ھے تو پھر یہ دیکھیں کہ آپ قرآن کتنا پڑھ رھے ھیں؟ یہی اللہ سے محبت ھے کہ قرآن کو بار بار پڑھا جائے اور دیکھا جائے کہ اللہ نے ھم سے کیا کیا باتیں کیں ھیں۔اپنے ایمان کی تجدید کی دعا کرتے رھیں کیونکہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ ایمان کی تجدید کے لیے دعا کرتے رھو ،ایمان ایسے ھی پرانا ھو جاتا ھے جیسے کہ پہنا ھوا کپڑا پرانا ھو جاتا ھے۔ایک دوسرے کے لیے دعا کرنے میں کنجوسی سے کام مت لیں ،کیونکہ اگر آپ اپنے بھائی کے لیے دعا کریں گے تو فرشتہ آپ کے لیے دعا کرے گا کہ اللہ اس کو بھی ایسا ھی عطا کر۔تکلیفوں ،مصیبتوں سے مت گھبرائیں ،کیونکہ آپ اپنے بچوں کے لیے رول ماڈل ھیں ،آپ گھبرا گئیے تو بچوں کو حوصلہ کون دے گا؟؟؟اللہ کی راہ میں دل کھول کر اور بہترین چیز خرچ کریں ،ایسا نہ ھو کہ جو چیز آپ کو پسند نہیں وھی اللہ کی راہ میں دے دیں،اللہ کو ھمارے صدقے کی کوئی ضرورت نہیں ،یہ ھم اپنے لیے کرتے ھیں کہ اللہ ھمیں معاف کر دے اور جنت میں جگہ دے دے۔۔۔۔۔آمین

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: