محبت میں باہر آنے نہیں دیتے

ایک آدمی نے مچھلی خریدی اور ایک مزدور سے کہا کہ گھر پہنچادوتواتنی مزدوری مل جاۓ گی۔مزدور نے کہا بہت اچھا تاہم اگر راستے میں نماز کا وقت ہوگیا تو میں پہلے نماز پڑھوں گا .

پھر مچھلی پہنچاؤں گا۔ اس آدمی نے رضامندی کا اظہار کیا۔ جب چلے تو کافی دور جا کر اذان ہوئی مزدور نے کہا کہ حسب وعدہ میں تو نماز پڑھوں گا آ دمی نے کہا بہت اچھا میں مچھلی کے پاس کھڑا ہوتا ہوں تم جلدی سے نماز پڑھ کر جاؤ ۔مزدور مسجد میں داخل ہوا اور نماز پڑھنے میں مشغول ہو گیا جب دوسرے لوگ نماز پڑھ کر باہر نکل آئے تو بھی یہ مزدورنماز پڑھ رہا تھا۔ اس آدمی نے دیکھا کہ بہت دیر لگ گئی تو آواز دینے لگا۔ اے میاں اتنی دیر ہوگئی ۔تمہیں کون باہر آنے نہیں دیتا۔ اس مزدور نے جواب دیا کہ جناب جو آپ کو اندر نہیں آنے دیتا وہی مجھے باہر نہیں جانے دیتا ۔سبحان اللہ عشق ومحبت والوں کا عجیب حال ہوتا ہے ۔ وہ نماز میں یوں محسوس کرتے ہیں جیسے محبوب حقیقی سے راز و نیاز کی باتیں کر رہے ہوں ۔
( معشق الہی ص۴۳)

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: