قصہ زلیخا

اس واقعہ کی خبر سارے مصر میں پھیل گئی اورعورتیں آپس میں باتیں کرنے لگیں کہ زلیخا اپنے غلام کو چاہتی ہے.

جب زلیخا کو اس کا علم ہوا تو اسے اپنی بدنامی کا خیال آیا، اس نے ترکیب سوچی وہ یہ کہ اس نے مصر کی عورتوں کی دعوت کی اور سب کے ہاتھوں میں ایک ایک چھری اور ایک ایک پھل دے دیا اور اسی وقت حضرت یوسف علیہ السلام کو وہاں لے آئی عورتوں نے جب حضرت یوسف علیہ السلام کے حسن و جمال اور خوبصورتی کو دیکھا تو وہ سب اپنے ہوش میں نہ رہیں اور چھریوں سے بجاۓ پھلوں کے اپنے ہاتھوں کو کاٹ لیا اور کہنے لگیں واقعیی میں کوئی انسان نہیں فرشتہ ہے، زلیخا نے ان عورتوں سے کہا کہ یہ وہی شخص ہے کہ جس کے لئے تم مجھے ملامت کرتی ہو، میں حقیقت میں اس کو چاہتی ہوں ، اگر اس نے میری محبت کو ٹھکرادیا تو میں اس کو قید کروا دوں گی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: