درود شریف کی برکت!چہرہ روشن ہو گیا


حضرت شیخ عبدالواح نے فرمایا: میں حج کے لئے روانہ ہوا تو میرےساتھ ایک اور آدمی ہولیا,میں نے اس کو دیکھا کہ وہ کھڑا ہوتو درود پاک بیٹھا ہوتو درود پاک جائے تو درود پاک آۓ تو درود پاک پڑھتارہے.

میں نے اس سے اس کا سبب دریافت کیا تو اس نے بتایا: کچھ سال ہوئے میں اپنے باپ کے ساتھ مکہ مکرمہ روانہ ہوا. جب ہم حاضری دے کر واپس ہوئے تو,ایک منزل پر ہم اترے اور آرام کیا میں سو گیا تو خواب میں کسی نے آ کر کہا: . اے اللہ کے بندے! اٹھ تیراباپ فوت ہوگیا ہے اور اس کا حال دیکھے اس کا چہره سیاہ ہوگیا ہے۔ میں گھبرا کر اٹھاباپ کے منہ سے کپڑا اٹھایا تو دیکھا وہ فوت ہو چکا تھا اور اس کا چہرہ سیاہ ہو چکا تھا.میں غمزدہ اور پریشانی کی حالت میں بیٹھا تھا کہ مجھے پر نیند آ گئی.میں نے عالم رویا میں دیکھا کہ میرے ماں باپ کے پاس چارسوڈانی کھڑے ہیں.ان کے ہاتھوں میں لوہے کی گرزیں ہیں. ایک کے پاس تھا.ایک پاوں کے پاس ,ایک دائیں جانب اور چوتھا بائیں جانب تھا۔ ابھی وہ مارنے نہ پائے تھے کہ اچانک ایک بزرگ حسین وجمیل چہره سبز پیراہن زیب تن ہے تشریف لائے,آتے ہی فرمایا: ہٹ جاؤ. یہ سن کر وہ چاروں پیچھے ہٹ گئے اور اس مرد بزرگ نے میرے باپ کے چہرہ سے کپڑا ہٹایا اور منہ پر ہاتھ مبارک پھیر دیا… میر کے پاس تشریف لائے اور فرمایا: اٹھ ! الله تعالی نے تیرے باپ کا چہرہ منور اورروشن کردیا ہے.میں نے عرض کیا: آپ کون ہیں؟ تو فرمایا: میں محمد بن عبداللہ ہوں .میں اٹھا اور میں نے کپڑاشایا تو میرے باپ کا چہرہ روشن تھا۔ جگمگا رہا تھا.پر میں نے اپنے طریقے سے کفن دفن کر دیا اور بتایا کہ میرا باپ کثرت سے درود پاک پڑھا کرتا تھا.سعادة الدارین
۱۲۹) نوٹ: جو حضرات درود شریف کی برکتوں اور انوارات کو لینا چاہیں وہ احقر کی کتاب”درود شریف کی برکات کا مطالع فرمائیں…..

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: