صلاح الدین ایوبی کے مثالی اخلاق

سلطان صلاح الدین ایوبی اور شاہ رگاچڑڈ کے درمیان جنگ جاری تھی دونوں فو جیں میدان جنگ میں دست بدست لڑ رہی تھیں اسی اثناء میں سلطان نے یہ کہ شام پر اپنے مایہ ناز گھوڑے پر سوار تلوار کا ہاتھ رکھا ۔

یکایک ایک تیر گھوڑے سے سینے میں لگ کر اسے خاک میں ملا دیتا ہے مگر رچرڈ ہارا نہیں بلکہ وہ پیدل لڑائی میں حصہ لے رہا ہے۔اس منظر کو دیکھ کر صلاح الدین ایوبی نے فوری طور پر ایک بہترین عربی گھوڑ ارچرڈ کو بھجوادیا شام کو جب صلیبی سردار اکٹھے ہوئے تو رچرڈ نے کہا:آج میرا گھوڑازیر ہو کر میدان میں مر گیا۔پھر کیا ہوا؟‘‘ سب سرداروں نے بیک آواز پوچھا!ہونا کیا تھا۔ رچرڈ نے جواب دیا ‘صلاح الدین ایوبی نے وہ کام کیا جس کی تم توقع بھی نہیں کر سکتے اس نے مجھے ایک بہترین عربی گھوڑا بجھوادیا۔پھر ذراست توقف کے بعد رچرڈ نے کہا یار وانصاف کی کہو ایسے عظیم دین سے ہم ہو سکتے ہیں ؟ تم کچھ بھی کہ اگر میں یہی کہوں گا کہ ہرگز نہیں ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: