ازواج مطہرات کا آپ صہ سے مال طلب کرنے کا دلچسپ واقعہ

مسند احمد میں ہے کہ حضرت ابوبکر رضی اللہ عنہ نے نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی خدمت میں حاضر ہونا چاہا لوگ آپ صلی اللہ علیہ وسلم کے دروازے پر بیٹھے ہوئے تھے اور آپ صلی اللہ علیہ وسلم اندر تشریف فرما تھے۔

اجازت چاہی.,اتنے میں حضرت عمر رضی اللہ عنہ بھی آگئے اجازت چاہی لیکن انہیں بھی نہ ملی تھوڑی دیر بعد دونوں کوبلایا فرمایا گیا، گئے دیکھا کہ آپ صلی الله علیہ وسلم کی ازواج مطہرات آپ کے پاس بیٹھی ہیں اور آپ صلی الله علیہ وسلم خاموش ہیں حضرت عمر رضی اللہ عنہ نے کہا دیکھو میں اللہ تعالی کے پیغمبر کو ہنسا دوں گا۔ پھر کہنے لگے یا رسول الله صلی اللہ علیہ وسلم کاش کہ آپ دیکھتے میری بیویی نے آج مجھ سے روپیہ پیسے مانگا میرے پاس تھا نہیں، جب زیاد وضد کرنے لگئی تو میں نے اٹھ کر گردن تاچی ۔ یہ سنتے ہی حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم ہنس پڑے اور فرمانے لگے۔ یہاں بھی یہی قصہ ہے دیکھو یہ سب بھی مجھ سے مال طلب کر رہی ہیں ابوبکر صدیق رضی اللہ عنہ حضرت عائشہ رضی الله عنہا کی طرف لپکے اور حضرت عمر رضی اللہ عن حضرت حفصہ رضی الله عنها کی طرف، اور فرمانے لگے : افسوس ! تم رسول الله صلی اللہ علیہ وسلم سے وہ مانگتی ہو جو آپ صلی اللہ علیہ وسلم کے پاس نہیں۔ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے جب اپنے پیاروں کے بدلے ہوئے تیور دیکھے تو انہیں روک دیا ورنہ دونوں بزرگ اپنی اپنی صاحبزادیوں کو مارتے۔ اب تو سب بیویاں کہنے لگیں ہم سے میں غلطی ہوئی اب ہم حضورصلی اللہ علیہ وسلم کو ہرگز اس طرح تنگ نہ کریں گی۔
(مسند احمد) (“یح اسلامی واقعات صفہ نمبر 149-150)

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: