نیت تلاوت قرآن کریم

بہت سے مسلمان قرآن مجید کی تلاوت کرتے ھوئے محض اجر و ثواب کی نیت کرتے ہیں۔ جبکہ قرآن پاک کی تلاوت کرتے وقت مزید کئی بڑی نیتیں بھی کی جا سکتی ہیں.

جس سے لوگ ناواقف ہیں اکثرحالانکہ قرآن پاک کی تلاوت کے وقت درج ذیل نیتیں کرنے سے قرآن پاک کے بے شمار انعامات و ثمرات سے بھی مستفید ہو سکتے ہیں.جیسا کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نےفرمایا:
إنما الأعمال بالنيات، وإنما لكل امرئ ما نوى “اعمال کا دارومدار نیتوں ہی پر ہے۔ اور ہر شخص کے لیے وہی کچھ ہےجس کی اس نے نیت کی”- ( مفہوم حدیث)قرآن پاک کی تلاوت کے وقت درج ذیل نیتیں بھی کر لی جائیں تو یقینا اس تلاوت پر ہم بے بہا انعامات حاصل کر سکتے ہیں ۔جیسا کہ میں علم اور اس پر عمل کی نیت سے قرآن مجید پڑھتا ھوں. میں اللہ تعالی سے ہدایت کے ارادے و نیت قرآن مجید پڑھتا ہوں ۔ لئے- میں اللہ تعالی کو یاد کرنے کی نیت سے قرآن مجید پڑھتا ہوں ۔ میں اپنی ظاہری و باطنی ( جسمانی و روحانی ) بیماریوں سے پاک ہونے کے ارادے و نیت سے قرآن مجید پڑھتا ہوں ۔
میں اس نیت سے قرآن پڑھتا ہوں کہ اللہ تعالی مجھے اندھیروں سے نکال کر روشنی اورنور عطا فرما دیں ۔
میں اس نیت سے قرآن پڑھتا ہوں کہ اللہ تعالی میرے دل کی سختی کو دور کر دیں اور میرے دل کو نرم فرما دیں میں اس نیت سے قرآن پڑھتا ہوں کہ اللہ تعالی میرے سینے کے تفکرات کو ختم فرمادیں.میں اس نیت سے قرآن پڑھتا ہوں : کہ میں غافل لوگوں میں نہ لکھا جاوں بلکہ یاد رکھنے والوں میں شمار کیا جاوں ۔-

میں اس نیت سے قرآن پڑھتا ہوں کہ اللہ تعالی کی ذات و صفات پر میرے یقین اور ایمان میں ترقی و اضافہ ھو ۔میں اس نیت سے قرآن پڑھتا ہوں کہ اللہ تعالی کے حکم کی تعمیل کرنے والا بن جاوں ۔ میں قرآن مجید کو ثواب کے لئے پڑھتا ہوں ، تاکہ مجھے اسکے ہر حرف کے بدلے 10 نیکیاں ملیں اور اللہ تعالی اپنے فضل سے مزید بڑھا کر عطا فرما دیں ۔ میں اس نیت سے قرآن پڑھتا ہوں کہ قیامت کے دن مجھے قرآن کریم کی شفاعت حاصل ھو جائے.میں رسول اللہ ﷺ کے حکم کی تعمیل کی نیت سے قرآن پڑھتا ھوں ۔ میں اس نیت سے قرآن پڑھتا ہوں کہ اللہ تعالی قرآن مجید کے سبب مجھے بلند مرتبہ والوں میں شمار فرما دے۔ میں اس نیت سے قرآن پڑھتا ہوں کہ قرآن مجید کی وجہ سے اللہ تعالی مجھے جنت میں داخل فرما دے اور مجھے اور میرے والدین کو تعظیم کا تاج پہنا دے ، اور میرے والدین کو کرامت کا لباس پہنا کر جنت میں داخل فرمادے ۔- میں اس نیت سے قرآن پڑھتا ہوں کہ اسکا پڑھنا مجھے اللہ تعالی کے قریب کر دے ۔ میں اس نیت سے قرآن پڑھتا ہوں کہ اللہ تعالی کے خاص بندوں میں شامل ہوجاؤں.میں اس نیت سے قرآن پڑھتا ہوں کہ معزز فرشتوں کے ساتھ ھو جاوں اور اللہ تعالی مجھے قرآن کے ماھر میں شمار فرمادے.میں جھنم کی آگ اور اللہ تعالی کے عذاب سے بچنے کی نیت سے قرآن پڑھتا ہوں ۔

میں اس نیت سے قرآن پڑھتا ہوں کہ مجھے اللہ تعالی کی معیت ( تعلق ) نصيب هوجاے۔میں اس نیت سے قرآن پڑھتا ہوں کہ دنیا و آخرت کی ذلت بھی میرے حق خلاف دلیل نہ بنے بلکہ میرے حق میں بنے. میں اس نیت سے قرآن پڑھتا ہوں کہ اللہ تعالی مجھے اس پر ثابت قدمی عطا فرما دے ۔میں اس نیت سے قرآن پڑھتا ھوں مجھے سکینہ ( اطمینان ) ملے اور رحمت مجھ پر نازل ہو اور اللہ تعالی کی بارگاہ میں میرا تزكره هو -میں اللہ تعالی سے خیر اور فضل کے حصول کے ارادے سے قرآن مجید پڑھتا ہوں۔ میں اس نیت سے قرآن پڑھتا ہوں کہ مجھے پاک هوا ( خوشبو ) نصیب ہو ۔ھوں کہ میں اس نیت سے قرآن پڑھتا گمراہ نہ ہوں اور نہ ہی آخرت اس دنیا میں میں دکھی ہوں میں اس نیت سے قرآن پڑھتا ہوں کہ اس کی برکت سے مجھ سے رنج و غم اور پریشانیوں کو دور کر دیا جائے ۔ میں اس نیت سے قرآن پڑھتا ہوں کہ قبر میں مجھے قرآن سے مجھے ( انسیت ) ھو اس دنیا میں میری رہنمائی کرے ، اور مجھے جنت میں لے جائے۔میں کہ اللہ تعالی قیامت کے دن میرے اور کافروں کے درمیان پرده حائل فرما دے۔۔ میں اس نیت سے قرآن پڑھتا ہوں کہ اللہ مجھے شرک اور بدعات سے بچا کے اہل توحید میں شامل فرما دے۔ میں قرآن اس لیے پڑھتا ھوں کہ میں دعا صرف اللہ سے مانگوں اور یہ عقیدہ رکھوں کہ میرے دل کی باتیں صرف اللہ تعالی ہی جانتا اور سن سکتا ھے.

یہ دل سے مانوں کہ سارے اختیارات صرف اللہ کے پاس ہیں اس نے اس میں کسی کو شریک نہیں کیا۔ قرآن مجید اس لئے پڑھتا ہوں کہ قرآن مجھے یہ راہ دکھاتا ھے کہ میری ساری حاجات صرف اللہ پوری کرسکتاھے ۔وہ میری ساری باتیں صرف وہی مشکل کشا حاجت روا ،داتا،غریب نواز اور دستگیر ھے اور اللہ کی یہ صفات کسی ا ور میں نہیں ہیں ۔ تو آئیے قرآن مجید والے لوگوں میں سے بنیں !! قرآن بتا ھے کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم اور انبیاء نے اللہ کی واحدانیت کا راستہ اپنایا اور صحابہ اکرام رضی اللہ اجمعین کامیاب انسان تھے اور سب کے سب جنتی تھے۔انہوں نے اللہ اور اس کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم کے رستے پہ عمل کر کے دکھایا ۔ھمیں بھی اسی سنتا ہے. میں اس نیت سے قرآن پڑھتا ھوں.رستے پہ چلنے سے کامیابی ملے گی.یقینا یہ اللہ تعالی کے ساتھ نفع بخش تجارت ہے ، جس پر اللہ تعالی اپنی رحمت اورکبھی نہ ختم ہونے والا فضل و احسان عطا فرما تےہیں.ی اللہ یہ تمام انعامات ہم سب کو عطا فرما ( آمین یا رب العالمین )

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: