خواہش دیدار رسولﷺ

غزوہ احد کے میدان میں ایک صحابی زخمی ہوۓ خون بہت نکل جانے کی وجہ سے قریب المرگ ہو چکے تھے ایک دم دوسرے صحابی ان کے قریب آۓ اور پوچھا آپ کو کسی چیز کی تمنا ہے؟

عرض کیا کہ ہاں انہوں نے پوچھا کہ کیا ؟ جواب ملا کہ آخری وقت میں حضوراکرم کا دیدار کرنا چاہتا ہوں۔ انہوں نے زخمی مجاہد کو اپنے کندھے پر اٹھایا اور ان کو لے کر تیزی سے اس طرف بھاگے جہاں رسول اکرم ﷺ تشریف فرما تھے آپ کے سامنے جا کر اتارا اور کہا کہ آپ کے محبوب ﷺ آپ کے سامنے ہیں جب نام سنا تو مجاہد کے جسم میں بجلی کی سی لہر دوڑ گئی کہ فورا طاقت بحال ہوگئی اپنے چہرہ کوحضوراکرم ﷺ کے سامنے کیا دیدار کرتے ہی ان کی حالت غیر ہوگئی اور انہوں نے اپنی جان جان آفریں کے سپردکر دی۔ (خطبات ذوالفقارس ۱۰۴ عشق النبی ص ۷۳ )

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: