مہر نبوت

حضور اقدس صلی ﷲ تعالیٰ علیہ وسلم کے دونوں شانوں کے درمیان کبوتر کے انڈے کے برابر مہر نبوت تھی۔ یہ بظاہر سرخی مائل اُبھرا ہوا گوشت تھا۔

چنانچہ حضرت جابر بن سمرہ رضی ﷲ تعالیٰ عنہ فرماتے ہیں کہ میں نے حضور صلی ﷲ تعالیٰ علیہ وسلم کے دونوں شانوں کے بیچ میں مہر نبوت کو دیکھا جو کبوتر کے انڈے کی مقدار میں سرخ اُبھرا ہوا ایک غدود تھا۔(شمائل ترمذی ص۳ وترمذی ج۲ص ۲۰۵)لیکن ایک روایت میں یہ بھی ہے کہ مہر نبوت کبوتر کے انڈے کے برابر تھی اور اس پر یہ عبارت لکھی ہوئی تھی کہ اللّٰهُ وَحْدَهٗ لَا شَرِيْكَ لَهٗ بِوَجْهٍ حَيْثُ کُنْتَ فَاِنَّكَ مَنْصُوْرٌیعنی ایک ﷲ ہے اس کا کوئی شریک نہیں (اے رسول !) آپ جہاں بھی رہیں گے آپ کی مدد کی جائے گی اور ایک روایت میں یہ بھی ہے کہ کانَ نُوْرًا يَّتَلَا ْٔ لَایعنی مہر نبوت ایک چمکتا ہوا نور تھا۔ راویوں نے اس کی ظاہری شکل و صورت اور مقدار کو کبوتر کے انڈے سے تشبیہ دی ہے۔
(حاشیه ترمذی ج۲ ص۲۰۵ باب ماجاء في خاتم النبوة)

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: